کوئی شخص حکم شرعی نہ جاننے کی وجہ سے ایک مدت تک غسل کی ترتیب کی رعایت نہیں کرسکا ہے , اسکی نماز اور روزوں کا کیا حکم ہے؟

حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای
حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای

باطل غسل کے ساتھ روزہ رکھنا

 

129. کوئی شخص حکم شرعی نہ جاننے کی وجہ سے ایک مدت تک غسل کی ترتیب کی رعایت نہیں کرسکا ہے , اسکی نماز اور روزوں کا کیا حکم ہے؟

ج۔ اگر غسل کو اس طرح سے انجام دیا ہے کہ شرعا باطل ہو,  تو اس حالت میں حدث اکبر کے ساتھ پڑھی ہوئی نمازوں کی قضا واجب ہے,  لیکن اگر اس طرح کا غسل صحیح ہونے کا معتقد تھا اور جنابت پر باقی رہنا عمداً نہیں تھا اس لئے آپکے روزوں پر صحیح ہونے کا حکم کیا جاتا ہے.

منبع: سائیٹ ہدانا نے آیت اللہ العظمی حضرت آیة اللہ العظمی خامنہ ای کے استفتائات سے اخذ کیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.