روزہ کی حالت میں مسوڑھوں کے خون کو نگلنے کا شک ہونا

روزہ کی حالت میں مسوڑھوں کے خون کو نگلنے کا شک ہونا

حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای
حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای

روزہ کی حالت میں مسوڑھوں کے خون کو نگلنے کا شک ہونا

 

196. بسا اوقات میرے لعاب دہن میں مسوڑھوں سے نکلا ہوا  خون مل جاتا ہے لہذا بعض اوقات  جو لعاب میں نگلتا ہوں اس کے بارے میں مجھے نہیں معلوم کہ اس میں خون بھی ملا ہے یا نہیں۔ اس حالت میں میرے روزوں کا کیا حکم ہے ؟

ج۔ مسوڑھوں کا خون اگر لعاب دہن سے مل کر مستھلک و نابود ہو جائے تو پاک ہے اس کے نگلنے میں کوئی مضائقہ نہیں ہے اور روزے کو باطل نہیں کرتا اوراسیطرح  اگر شک ہو کہ لعاب خون آلود ہوا ہے یا نہیں تو اسے نگلا جا سکتا ہے اور اس سے روزہ پر کوئی اثر نہیں پڑتا.

 

منبع: سائیٹ ہدانا نے آیت اللہ العظمی حضرت آیة اللہ العظمی خامنہ ای کے استفتائات سے اخذ کیا

🔗 لینک کوتاه

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.