روزہ کی حالت میں حیض ہونا

حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای
حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای

عورتوں کی ماہانہ عادت

 

روزہ کی حالت میں حیض ہونا

201. اگر ماہ رمضان میں غروب آفتاب سے دو گھنٹہ یا اس سے قبل روزہ دار عورت خون حیض دیکھے تو کیا اس کا روزہ باطل ہو گا؟
ج۔  اس کا روزہ باطل ہو جائے گا.

 

202. اگر عورت کو نذر معین کے روزہ کے درمیان خون حیض آ جائے تو اس کے روزہ کا کیا حکم ہے؟
ج۔ حیض آنے سے روزہ باطل ہو جائے گا اگرچہ دن کے ایک جز میں  ہی واقع ہوجائے,اور  عادت سے پاک ہونے کے بعد اس پر قضا واجب ہے.

 

203. جو عورت کفارے کے ساٹھ دن روزے رکھ رہی ہے اور ان دنوں کے درمیان عادت ہوجائے  تو وہ کیا کرے گی؟
ج۔ عادت کے ایام ختم ہونے کے بعد باقی روزوں کو رکھے اور دوبارہ ابتدا سے روزہ رکھنا لازم نہیں ہے.

 

صبح کی اذان سے پہلے حیض سے پاک ہونا

204. حائضہ عورت ماہ رمضان میں اگر صبح کی اذان سے پہلے پاک ہوجائے تو اسکا حکم کیا ہے ؟
ج۔اگر غسل کرنے کے لئے وقت کافی ہوتو غسل ورنہ تیمم انجام دے اور روزہ صحیح ہوگالیکن اگر جان بوجھ کر غسل یا تیمم نہ کرے تو روزہ باطل ہوگا اور کفارہ دینا پڑے گا.

 

ماہ رمضان کے دن میں حیض سے پاک ہونے کا علم حاصل ہونا

205. ماہ رمضان میں اگر کوئی عورت حیض سے پاک ہونے پر اطمینان نہ ہونے کی وجہ سے سحری کو غسل نہ کرے لیکن دن میں وہ متوجہ ہوجائے کہ رات میں ہی پاک ہوئی تھی, اس عورت کے لئے حکم شرعی کیا ہے اور کیا دن میں اس پر امساک واجب ہے؟
ج۔  اگر روزہ باطل کرنے والے کسی کام کا مرتکب نہ ہوئی ہو تو روزے کی نیت کرے اور احتیاط واجب کی بنا پر اس دن کی قضا بھی رکھے لیکن اگر مبطلات روزہ کی مرتکب ہوچکی ہو تو اس دن کا کفارہ اس پر واجب نہیں ہے.

 

منبع: سائیٹ ہدانا نے آیت اللہ العظمی حضرت آیة اللہ العظمی خامنہ ای کے استفتائات سے اخذ کیا

🔗 لینک کوتاه

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.