روزہ دار کا بھول کر غسل ارتماسی کرنا

حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای
حضرت آیة اللہ العظمی سید علی خامنہ ای

روزہ دار کا بھول کر غسل ارتماسی کرنا

 

162. اگر روزہ دار اذان ظہر سے قبل تک متوجہ نہ ہو کہ مجنب ہوا ہے پھر اس کے بعد غسل ارتماسی کر ڈالے تو کیا اس سے روزہ باطل ہو جائے گا؟ اور اگر غسل  کے بعد متوجہ ہو کہ وہ روزے کی حالت میں غسل ارتماسی کرچکا ہے تو کیا اس پر روزے کی قضا واجب ہے؟

ج۔ اگر روزے کی حالت میں غفلت و فراموشی کی بنا پر غسل ارتماسی کر لی ہو تو اس کا روزہ اور غسل صحیح ہے اور اس پر روزہ کی قضا واجب نہیں ہے.

 

منبع: سائیٹ ہدانا نے آیت اللہ العظمی حضرت آیة اللہ العظمی خامنہ ای کے استفتائات سے اخذ کیا

[Total: 0    Average: 0/5]

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.